Homeउर्दूدہلی میں وزیر اعظم مودی کے بعد اب وزیر اعلیٰ کیجریوال کے...

دہلی میں وزیر اعظم مودی کے بعد اب وزیر اعلیٰ کیجریوال کے خلاف لگا پوسٹر، لکھا گیا- ’بے ایمان، رشوت خور اور تاناشاہ!‘

نئی دہلی: راجدھانی دہلی میں عام آدمی پارٹی (عآپ) اور بی جے پی کے درمیان ‘پوسٹر وار’ شروع ہو گئی ہے۔ پہلے شہر بھر میں وزیر اعظم مودی کے خلاف پوسٹر لگائے گئے اور اب دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کے خلاف پوسٹر لگائے گئے ہیں۔ منڈی ہاؤس کے قریب پوسٹر پر دہلی کے وزیر اعلیٰ کی تصویر ہے جس پر لکھا ہے ’’اروند کیجریوال کو ہٹاؤ، دہلی کو بچاؤ۔‘‘ واضح رہے کہ وزیر اعظم مودی کے خلاف جو پوسٹر لگائے گئے تھے لگانے والے کا نام نہیں تھا جبکہ کیجریوال کے خلاف لگائے گئے پوسٹر پر نیچے منجندر سنگھ سرسا کا نام لکھا گیا ہے۔

پوسٹر میں عام آدمی پارٹی کے سربراہ اروند کیجریوال کو ’بے ایمان، رشوت خور اور تاناشاہ‘ بھی قرار دیا گیا ہے۔ قبل ازیں، منگل (21 مارچ) کو وزیر اعظم مودی کے خلاف ‘قابل اعتراض’ پوسٹر پورے دہلی شہر میں دیکھے گئے تھے۔ اس کے خلاف دہلی پولیس نے تقریباً 100 ایف آئی آرز درج کی ہیں اور 6 لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔

وزیر اعظم کے خلاف لگائے گئے ان پوسٹروں پر لکھا تھا ‘مودی ہٹاو-دیش بچاؤ۔‘ دہلی پولیس نے عام آدمی پارٹی کے دفتر سے ایک وین بھی ضبط کی، جس میں اس طرح کے ہزاروں پوسٹر رکھے گئے تھے۔ ان پوسٹروں پر پرنٹنگ پریس کا کوئی نام نہیں تھا اور نہ ہی کوئی ایسی معلومات تھی جس سے یہ معلوم ہو سکے کہ یہ پوسٹرز کس نے چھاپے ہیں۔

پولیس کی کارروائی پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے وزیر اعظم مودی کو ‘عدم تحفظ کا شکار’ اور ‘خوف زدہ’ قرار دیا، جبکہ پولیس نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے عام آدمی پارٹی کے ہیڈ کوارٹر سے نکلنے والی گاڑی سے 2000 سے زیادہ پوسٹر ضبط کئے ہیں۔ پولیس نے بتایا کہ دہلی کے کئی حصوں میں دیواروں اور ستونوں پر ایسے پوسٹر چسپاں پائے گئے جن پر ‘مودی ہٹاو، دیش بچاؤ’ لکھا ہوا تھا۔انہوں نے بتایا کہ گرفتار 6 افراد میں دو پرنٹنگ پریس کے مالکان کو بھی شامل ہیں، کیونکہ انہوں نے پوسٹر پر پرنٹنگ پریس کی تفصیلات نہیں دیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس واقعہ میں آپ کا کوئی کارکن ملوث ہے یا نہیں، اس کی جانچ کی جا رہی ہے۔ اہلکار کے مطابق دہلی پریوینشن آف ڈیفیسمنٹ آف پراپرٹی ایکٹ اور پریس اینڈ بک رجسٹریشن ایکٹ کے تحت ایف آئی آر درج کی گئی تھی۔ دہلی پولیس کی کارروائی کے خلاف عام آدمی پارٹی جنتر منتر پر بڑا مظاہرہ کرے گی۔ اس مظاہرے میں اروند کیجریوال بھی شرکت کریں گے۔

RELATED ARTICLES

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular

Recent Comments